کسی فقیر کی جھولی میں جب میں نے ایک سکہ ڈالا تب یہ جانا کہ اس مہنگائی کے زمانے میں دعائیں آج بھی کتنی سستی ہیں ….. !

آج کل کے اس بے حسی کے دور میں اگر کوئی دعا دے تو اس کے احسان مند بنو !

اور خود بھی اپنی زبان پر ہمیشہ سب کے لئے دعائیہ کلمات رکھا کرو کیوں کہ وہ آپ کے اپنے حق میں بھی قبول ہوتے ہیں …… !

Leave a Reply

Fill in your details below or click an icon to log in:

WordPress.com Logo

You are commenting using your WordPress.com account. Log Out / Change )

Twitter picture

You are commenting using your Twitter account. Log Out / Change )

Facebook photo

You are commenting using your Facebook account. Log Out / Change )

Google+ photo

You are commenting using your Google+ account. Log Out / Change )

Connecting to %s