وصیت: اللہ تعالی جو کچھ تجھے دے اور جو کچھ تجھ سے چھین لے، اس پر غور کر
جو اللہ عز وجل تجھے دے اور جو تجھ سے چھین لے، اس پر غور کر۔ کیونکہ اللہ تعالی تجھ سے اسی لیے کچھ لیتا ہے تاکہ تو صبر کرے اور وہ تجھ سے محبت کرے؛ کیونکہ وہ صبر کرنے والوں سے محبت کرتا ہے۔ اگر وہ تجھ سے محبت کرے گا تو تیرے ساتھ ویسا ہی معاملہ روا رکھے گا جیسا کوئی محب اپنے محبوب سے رکھتا ہے؛ یعنی اگر تو اپنی خیر خواہی چاہے گا تو وہ تیرے ساتھ ہو گا۔ لیکن اگر تو نے اپنی خیر خواہی نہ چاہی تب بھی وہ تجھ سے محبت کرنے کے سبب تیرے ساتھ ویسا کرے گا جس میں تیرا فائدہ ہو گا۔ چاہے تجھے اُس حال میں اس کا یہ فعل نا پسند ہی کیوں نہ ہو؛ کیونکہ اِس کے بعد تو اس کے نتیجے کو سراہے گا
فتوحات مکیہ از شیخ اکبر ابن العربی

Leave a Reply

Fill in your details below or click an icon to log in:

WordPress.com Logo

You are commenting using your WordPress.com account. Log Out / Change )

Twitter picture

You are commenting using your Twitter account. Log Out / Change )

Facebook photo

You are commenting using your Facebook account. Log Out / Change )

Google+ photo

You are commenting using your Google+ account. Log Out / Change )

Connecting to %s